Pin It

Mera Noha Hawa Likhe Gi

comments
میں کہ اس شہر کا سیماب صفت شاعر ہوں
میری تخلیق میرے فکر کی پہچان بھی ہے

میرے حرفوں ، میرے لفظوں میں ہے چہرہ میرا
میرا فن اب میرا مذہب ، میرا ایمان بھی ہے

میر و غالب نہ سہی ، پھر بھی غنیمت جانو
میرے یاروں کے سِرہانے میرا دیوان بھی ہے

مطمئن ہوں کہ مجھے یاد رکھے گی دنیا
جب بھی اس شہر کی تاریخِ وفا لکھے گی

میرا ماتم اسی چپ چاپ فضا میں ہوگا
میرا نوحہ انہی گلیوں کی ہوا لکھے گی
Mohsin Naqvi

Get Free Updates in your Inbox
Follow us on:
facebook twitter rss
 

Support Us

If you like my collection, then kindly spread my voice using the badge below:-

© 2011. All Rights Reserved | Killer Poetry Collection | Template by Blogger Widgets

Home | About | Top